Mut Ki Iddat | Iddat ke Masail in Urdu | Bewa ki Iddat Ke Masail In Urdu | موت کی عدت کے متفرق مسائل

Spread the love

موت کی عدت کے متفرق مسائل

اگر کسی آدمی نے نکاح کیا بغیر گواہوں کے پھر وہ مر گیا یہ عورت عدت کیسے گزارے گی عدت حیض والی گزارے گی یعنی طلاق والی یا شوہر کے فوت ہونے والی یعنی چار مہینے دس دن جو بیوہ کی عدت ہوتی ہے

جواب ایسی عورت عدت طلاق والی گزارے گی نہ کہ ایسے کے جس عورت کا شوہر مر جاے وہ چار مہینے دس دن گزارتی ہے اس عورت کی طرح اس کی عدت نہیں ہوگی بلکہ اگر وہ عورت حیض والی ہے تو اس کے تین حیض عدت ہوگی اگر اس کو حیض نہیں آتا اس کے تین مہینےعدت ہوگی اور اگر اس کو حمل ٹھہر گیا ہے تو وضع حمل کی عدت ہوگی

 

اگر کسی شخص نے ایسی عورت سے نکاح کیا کہ جس کی بہن اس آدمی کے ابھی نکاح میں موجود تھی زندہ سلامت پھر یہ آدمی مر گیا کیا اس عورت پر عدت طلاق والی ہوگی یعنی اس عورت والی کہ جس کو طلاق ہو جائے اور اس کی بھی وہی عدت ہو گی یا اس عورت کی طرح ہوگی کہ جس کا شوہر مر جائے اس کی عدت چار مہینے دس دن ہوتی ہے اس عورت کی عدت کیسے ہوگی

جواب ایسی عورت کہ جس کا نکاح اس کی ہمشیرہ کی موجودگی میں اس کے بہنوئی سے ہو گیا جب کہ ہمشیرہ بھی اس کے نکاح میں موجود تھی پھر شوہر مر گیا اس عورت کی عدت طلاق والی ہوگی یعنی اگر اس کو ماہواری آتی ہو تین ماہواریاں اس کی عدت ہوگی اگر اس کو ماہواری نہیں آتی تو تین مہینے اس کی عدت ہوگیاگر اس کو حمل ٹھہرا ہوا ہے تو وضع حمل اس کے عدت ہوگی

 

مسئلہ نمبر 3 کسی آدمی نے بیوی کو طلاق باءن دے دی پھر وہ مر گیا یہ عورت اب طلاق والی عدت پوری کرے گی یا بیوہ والی عدت پوری کرے گی

 

جواب دیکھا جائے گا ایام اگر طلاق کے زیادہ بنتے ہیں تو طلاق والی عدت گزارے گی اور اگر طلاق کے ایام طلاق کا دن زیادہ زیادہ نہیں بنتے بیوہ والی عدت پوری کرے گی یا نہیں چار مہینے دس دن

اگر شوہر نے بیوی کو طلاق رجعی دی اور عدت پوری نہیں ہوئی شوہر مر گیا تو یہ عورت عدت طلاق والی اس کی ہوگی یابیوہ والی اس کی عدت ہوگی

جواب اس عورت پر وفات کی عدت پوری کرنا لازم ہوگی نہ کہ طلاق والی عدت

مسئلہ نمبر 5 اگر کسی عورت کا شوہر مر جائے اور ان کو خبر نہ ہو اور یہاں تک کہ چار مہینے دس دن بعد پتا چلے کیا یہ عورت عدت دوبارہ گزارے گی کہ نہیں

جواب جس عورت کا شوہر مر گیا ہو اس کو پتہ نہ چلا ہو چار مہینے بعد پتہ چلے تو اس کی عدت پوری ہو چکی ہے اب دوبارہ عدت بیٹھنا اس کے لئے لازم نہیں

مسلہ نمبر 6 اگر کسی عورت کو طلاق ہو گئی اور اس کو پتا نہیں چلا جب پتہ چلا تو اتنے ایام پورے ہو چکے تھے جو عدت کے ہوتے ہیں کیا یہ عورت عدت دوبارہ گزارے گی کہ نہیں

جواب جس عورت کو طلاق ہو چکی ہو اور اس کو معلوم نہ ہو طلاق کا جب پتہ چلا عدت کے ایام گزر چکے تھے تو عدت دوبارہ نہیں گزارے گی کیوں کہ اس کی عدت پوری ہو چکی ہےعدت بیٹھنا واجب نہیں

مسئلہ نمبر 7 اگر کوئی عورت کسی کے گھر چلی جائے اور اس کا شوہر مر جائے تو اس کی عدت کہاں لازم ہوگی کیا اسی گھر میں عدت پوری کرے جس میں اس کو خبر ملی ہے یا اپنے گھر واپس آئے

جواب جیسے اس عورت کو شوہر کی وفات کا علم ہو فورا گھر آئے اور گھر آکر عدت اپنی پوری کرے

مسلہ نمبر 8 کسی عورت کا بطور عدت کے سال بھر کے لئے بیٹھنا کیسا ہے کیا یہ جائز ہے

جواب کسی عورت کا بطور عدت کے سال بھر کے لئے بیٹھنا حرام ہے


Spread the love

Leave a Reply

Your email address will not be published.