Zehar ka ilaj | zehar ka asar khatam karne ka triqa | زہرختم کرنےکاطریقہ | تخم ترنج

Zehar ka ilaj | zehar ka asar khatam karne ka triqa | زہرختم کرنےکاطریقہ | tib e nabvi in urdu
Spread the love

تخم ترنج

اس میں تحلیل اورتجفیف رطوبت کی قوت ہے ابن ماسویہ بغدادی مشہور طبیب نے لکھا ہے کہ ایک مثقال وزن کے برابر تخم کو نیم گرم پانی کے ساتھ استعمال کیا جائے تو زہر ہلاہل کے لیے تریاق ہے اور اس کو پکا کر طلاءکرنا بھی مفید ہے اگر اس کو کوٹ کر سانپ کے ڈسے ہوئے مقام پر لگا دیں تو بہت زیادہ نفع ہوگا اسی طرح یہ پاخانے کو نرم کرتا ہے منہ کی بدبو دور کرتا ہے اور یہی فائدہ اس کے چھلکے میں پایا جاتا ہے بعض دوسرے اطباء نے لکھا ہے کہ اگر نوگرام تخم ترنج کو نیم گرم پانی کے ساتھ پینے سے بچھو کے ڈسےہوئےکو فائدہ پہنچتا ہے اس طرح اس کو پیس کر ڈسے ہوئےمقام پر رکھا جائے تو درد جاتا رہتا ہے اور بعض دوسرے اطباء نے لکھا ہے کہ ہر قسم کے قاتل زہر کے لئے تخم ترنج تریاق کا کام کرتا ہے اور ہر طرح کے کیڑے مکوڑے کے کاٹنے میں نفع بخش ہے

 

بیان کیا جاتا ہے کہ ایران کے سلاطین میں سے ایک نے اطباء کے ایک گروہ سے ناخوش ہو کر ان کو جیل میں ڈال دینے کا حکم دیا اور ان کو اختیار دیا کہ وہ اپنے لیے کسی ایک چیز کو بطور سالن پسند کرلیں اس کے سوا انہیں کچھ نہیں دیا جائے گا تو انہوں نے ترنج کو ترجیح دی ان سے دریافت کیا گیا کہ صرف ترنج ہی کو کیوں پسند کیا تو انہوں نے جواب دیا کہ یہ اگر تازہ ہے تو خوشبودار ہے اور دیکھنے میں بھی حسین ہے اس کا چھلکا بھی خوشبودار ہوتا ہے اور اس کا مقصد تو میوہ ہے اور اس کی ترسیل سال ہے اور اس کا تخم تریاق کا کام کرتا ہے جس میں ہلکی روغنیت بھی ہوتی ہے اور حقیقت تو یہ ہے کہ اس کے منافع کی تشبیہ خلاصہ موجودات یعنی اس مرد مومن سے دی گئی ہے جو قرآن تلاوت کرتا ہے اور بعض بزرگوں کا طریقہ یہ تھا کہ اس کو سامنے رکھ کر دیکھتے تھے اس لیے کہ اس کے دیکھنے سے دلی فرحت حاصل ہوتی ہے


Spread the love

Leave a Reply

Your email address will not be published.